ہرات اور نمروز میں داعشی خوارج کا ایک اہم نیٹ ورک تباہ

المرصاد کے ایک معتبر ذریعے نے صوبہ ہرات سے اطلاع دی ہے کہ سیکورٹی فورسز کے بعض آپریشنز میں فتنہ پرور خوارج میں سے ایک شخص ہلاک اور متعدد کو زندہ پکڑ لیا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق ہلاک ہونے والے شخص سے ایک عدد پستول اور ایک عدد کلاشنکوف بھی برآمد ہوئی ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ کارروائیاں ہرات اور نمروز صوبوں میں اس گروہ کو ختم کرنے کے لیے کی گئیں جس نے رواں ماہ کی 10 تاریخ بروز جمعہ ہرات کے جبریل قصبے میں متعدد شیعہ ہم وطنوں کو زخمی اور قتل کیا تھا۔

ذرائع کے مطابق گرفتار خوارج میں سے کچھ انتہائی اہم ہیں اور بہت سے جرائم میں ملوث ہیں۔ یہ گروہ شیعہ شہریوں پر پچھلے حملوں میں بھی ملوث تھا اور اس کی قیادت پڑوسی ملک میں خوارج کا نیٹ ورک کر رہا تھا۔

ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ ایک خصوصی ٹیکنیکل اور پروفیشنل ٹیم نے معاملے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں اور توقع ہے کہ مزید پیش رفت ہوگی۔
ان شاءاللہ