پیارے نوجوان! داعش اسلام کو بد نام کر رہا ہے

#image_title

پیارے نوجوان! داعش اسلام کو بد نام کر رہا ہے

شہاب الافغانی

اسلامی خلافت کے بعد امت مسلمہ کفار کے ہاتھوں ہر قسم کے مظالم، وحشت اور قتل و غارت گری کا شکار ہو چکی ہے،  امت کے مظلوم اور نونہال نوجوانوں کو جب امت کے اتحاد اور قیادت کے بارے میں بتایا جائے تو وہ اپنے جذبات پر قابو نہیں رکھ سکتے۔

 

کفار نہ صرف مسلمانوں پر ظلم کرتے ہیں بلکہ انہوں نے ایسے گروہ بھی بنائے ہیں، آپ سوچیں گے کہ وہ ملت اسلامیہ کی قیادت کرتے ہیں، لیکن ایسا ہر گز نہیں ہوتا۔

 

ان گروہوں میں سے ایک داعشی خوارجیوں کا فتنہ ہے جو اسلام، جہاد، مجاہد اور مسلمانوں کو بدنام کرنے کے لیے وجود میں لایا گیا ہے۔

پچھلے 10 سالوں میں داعش نے زیادہ تر ان جہادی گروپوں پر سخت حملے کیے ہیں جو صلیبیوں اور یہودی جنگجوؤں کے خلاف بہادری اور شہامت سے لڑ رہے تھے۔

اپنے دس سالہ سفر میں داعش نے دنیا کے ان جہادی شخصیتوں کو مغربی ممالک سے دھوکہ اور فریب میں بلا کر شہید کردیا جو اسلامی امت کے اتحاد کے خواہشمند تھے، اور یہ کام یورپ اور مغربی ممالک کو ہمیشہ کے لیے یا کئی سالوں کے لیے جہادی شخصیات سے پاک کرنے کے لیے کیا گیا، مغربیوں نے داعش کے ذریعے یہ کام کیا، اور اس کام میں ایک حد تک وہ کامیاب بھی ہوگئے۔

 

شرک اور بدعت کے بہانے تاریخی مساجد کو مسمار کرنا، صحابہ کرام اور صالحین کی قبروں کو بموں سے اڑانا یہ وہ کام تھا جس کے ذریعے کفار اسلامی تاریخ اور امراء کے کارناموں کو مٹانا اور تباہ کرنا چاہتے تھے، اور یہ کام بھی ان خارجی کتوں کے ذریعے کیا گیا۔

پیارے نوجوان! داعش ایک ایسا گروہ ہے جو مذہب اور تقلید کو مطلق شرک سمجھتا ہے۔ آپ کے والد، دادا، اور گزرے ہوئے نیک آباءو اجداد کو مشرک اور جہنمی کہتے ہیں۔

 

پیارے نوجوان! داعش وہ لوگ ہیں جنہوں نے اپنے ظہور کے بعد اسلام کے لیے کچھ نہیں کیا، اگر آپ ان کا کوئی کارنامہ جانتے ہیں تو ان کی مثال دیں۔

 

پیارے نوجوان! عراق اور شام کو نظر انداز کریں، افغانستان میں داعش کس پر حملہ آور ہیں؟

کیا مسجد، ممبر، محراب اور علماء کی شہادت کے علاوہ انہوں نے کچھ کیا ہے؟

پیارے نوجوان! ہوشیار رہیں چرم زبان موسادی قوتوں کے فریب میں نہ آئیں، کیونکہ وہ مداریوں کی طرح ہیں، لمحہ بھر میں لوگوں کو دھوکہ دے کر ورغلاتے ہیں۔ اور ان کے فریب میں آنا آپ کے لئے آخرت میں نقصان کا باعث بنے گا۔