اپنے مشن کو جاری رکھتے ہوئے داعش کا مغربی افریقہ میں القاعدہ پر حملہ

داعشی خوارج نے کہا ہے کہ مغربی افریقی ملک برکینا فاسو میں القاعدہ کے مراکز پر کاروائیاں کی گئی ہیں اور مجاہدین کو جانی نقصان پہنچایا گیا ہے۔

داعشی خوارج کی طرف سے جاری کردہ ایک سرکاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ کاروائیاں کایا شہر کے گاؤں کالامپا میں القاعدہ کے مراکز پر کی گئیں۔

خوارج نے اس حملے کی کچھ تصاویر بھی جاری کی ہیں اور خبر میں القاعدہ کو ’’مرتد ملیشیا‘‘ قرار دیا ہے۔ داعش یہ نام ان مجاہدین گروپوں کو دیتی ہے جو اس کے منحرف نظریات کی مخالفت کرتے ہیں۔

غور طلب بات یہ ہے کہ برکینا فاسو اور ساتھ کے دیگر ممالک میں تنظیم القاعدہ کی شاخ جماعت النصرۃ الاسلام والمسلمین کے نام سے سرگرم ہے۔ لیکن داعشی خوارج نے دیگر خطوں کی طرح مغربی افریقہ میں بھی مقامی جہادی گروپوں کی تکفیر کی ہے اور ان پر حملہ کر کے داعش نے خود اپنی اصطلاح میں ’’طاغوتی حکومتوں‘‘ کو سانس لینے کا موقع فراہم کیا ہے۔