لو آپ اپنے دام میں صیاد آگیا !

#image_title

لو آپ اپنے دام میں صیاد آگیا !

 

تحریر: عزیز الدین مصنف

 

دعوتی میدان میں امارت اسلامیہ کے حامی اور انٹی داعش المرصاد میڈیا نے ایک بہت قیمتی ویڈیو جوکہ ایک دستاویزی فلم ہے، شائع کی ہے جس میں داعش خراسان سے تعلق رکھنے والے تاجکستان کے 7 نوجوانوں کے اعترافی بیانات شامل ہیں جنہیں کچھ وقت قبل افغانستان میں امارت اسلامیہ نے گرفتار کیا گیا تھا ۔

 

یہ نسخہ اور ویڈیو بہت ہی اہم ہے اور اسے ہر جگہ شائع کیا جانا چاہیے، خصوصی طور پر اس کا ترجمہ انگلش اور عربی میں بھی کیا گیا ہے تا کہ عرب اور غیر عرب اس سے یکساں فائدہ اٹھا سکیں۔ البتہ اس کا اردو ترجمہ فی الحال دستیاب نہیں ہے۔ المرصاد سے وابستہ ذمہ داران کی توجہ اس طرف بھی دلائی جاۓ تو بہتر رہے گا ۔ تاکہ اردو بولنے والے حضرات بھی اس ویڈیو سے فائدہ اٹھا سکیں ۔

 

یہ ویڈیو تاجک خراسان داعش سے وابستہ افراد کی ندامت اور افسوس کو ظاہر کرتی ہے۔ الله تعالیٰ ہمیں اور ان کو حق اور ہدایت کی راہ پر چلائے ۔

 

جب داعش کا کوئی فرد یا کمانڈر آزاد ہوتا ہے تو آپ اسے ہر وقت مسلمانوں پر چیختے چلاتے ہوئے دیکھتے ہیں کہ "تم مرتد ہو اور ہم تمہیں جلد قتل کرنے آئیں گے،” اور وہ مسلمانوں کی کھوپڑیوں پر ریاست (نام نہاد خلافت) قائم کرنا چاہتے ہے وغیرہ… لیکن گرفتاری کے بعد وہ بھیگی بلی بن جاتے ہیں سب کچھ اگل دیتے ہیں .

 

داعش کے ان قیدیوں نے بہت اہم چیزوں کا ذکر کیا ہے جیسے:

 

1_ داعش خوارج اپنے صفوں میں افراد کی بھرتی کے لیے ٹیلی گرام کا استعمال کرتے ہیں ۔

داعش خرافات کا شیطانی میڈیا آج بھی اپنا زہر پھیلا رہا ہے اور جاہل مسلمانوں کو اسی طرح ورغلا جس طرح اس نے ان غریب نوجوانوں کو دھوکہ دیا ۔

 

2_ بھرتی کے پہلے مرحلے میں بھرتی کرنے والوں کے ساتھ اعلیٰ درجے کی مہربانی، اور نرمی کا سلوک کیا جاتا ہے اور جب نیا بھرتی ہونے والا داعش تک پہنچ جاتا ہے تو یہ سلوک سختی اور ظلم میں بدل جاتا ہے ۔ (منافقت اور تفرقہ بازی) ۔

 

3_ جب داعش نے ان غریب نوجوانوں کو بھرتی کیا تو انہیں یہ دھوکہ دیا کہ اس کے پاس علاقوں کا کنٹرول ہے اور ان کے پاس زمین اور اختیار ہے، پھر یہ نوجوان جب وہاں پہنچتے ہیں تو حیران رہ جاتے ہیں کہ انہیں گھروں اور بنکروں میں چھپنے پر مجبور کیا جاتا ہے اور انہیں باہر جانے کی بھی اجازت نہیں ہوتی

 

4_ داعش صرف اور صرف ایک گمراہ راستہ ہے ۔

جیسا کہ ایک صرف یک طرفہ سڑک، جس کا انجام گہری کھائی ہے، یہاں صرف ہلاکت ہے ۔ دنیا اور اور آخرت دونوں کے لحاظ سے ۔

 

5_ داعش کی طرف ہجرت کرنے کے بعد ان غریب نوجوانوں نے پہلا قدم جو اٹھایا وہ یہ تھا کہ داعش کی ہدایات پر ان کے پاسپورٹ جلا دیے گئے، تاکہ ان کا واپسی کا راستہ منقطع ہو جائے ۔

 

6_ داعش نے تاجک نوجوانوں کو فون استعمال کرنے اور ان کے اہل خانہ کو کال کرنے سے روکا ( اسیروں کا بیان ) ۔

 

7_ داعش نے اپنے ان نئی بھرتی شدہ افراد کو کسی بھی قسم کے سوالات اور معلومات کرنے سے روک دیا تھا ۔

 

8_ کارکنوں کو نام نہاد خلیفہ کے بارے میں پوچھنے سے منع کیا گیا ۔

9_ان کو یہ پوچھنے سے منع کیا گیا ہے کہ پیسہ اور اسلحہ کہاں سے آیا؟

10_ آپ کو مذہبی سوالات کرنے کی اجازت نہیں ہے ۔

11_ داعشی معاملات کے بارے آگاہی نہیں رکھنی، نہ ہی کسی سے کوئی سوال پوچھنا ہے کہ یہ چیز کیسے ہے یا آیا یہ شریعت میں جائز ہے یا نہیں!؟

 

ورنہ آپ پر جاسوس ہونے کا الزام لگایا جائے گا، اور آپ کو مارا پیٹا جائے گا، اس لیے آپ جھوٹ بول کر بھی اپنے آپ سے اعتراف کرتے ہیں کہ آپ جاسوس ہیں، پھر آپ کو نارنجی رنگ کا سوٹ پہننے کے بعد سزائے موت دی جائے گی ۔ داعش کا میڈیا اس منظر کو ریکارڈ کر کے شائع کرے گا کہ ہم نے ایک جاسوس پکڑا ہے ۔

 

12_ داعش ان غریب نوجوانوں کو اپنی خودکش کاروائیوں پر مجبور کر رہی ہے کہ وہ افغانستان میں مساجد کو اڑائیں کہ یہاں سب کافر ہیں، جیسا کہ ان نوجوانوں میں سے ایک نے مسجد میں خود کو دھماکے سے اڑانے کا ارادہ کیا تھا، لیکن اللہ تعالیٰ نے اسے بچا لیا، اس سے واضح اشارہ ملتا ہے کہ خودکش حملہ آور اپنے طور پر خودکش آپریشن کا نہیں کرتے، بلکہ وہ اپنے امراء کی طرف سے ایسا کرنے پر مجبور ہوتے ہیں، اور سپاہی کے پاس رضامندی کے سوا کوئی چارہ نہیں ہوتا ۔

 

13_ بعض داعشیوں نے عراق اور شام کا سفر کرنے کو کہا تو ان کی درخواست مسترد کر دی گئی اور وہ انہیں یہ بہانہ بنا کر افغانستان لے گئے کہ وہاں جانے کا کوئی راستہ نہیں ہے ۔

 

14_ اس ویڈیو نے داعش کے جھوٹ کو ظاہر کیا جب انہوں نے کہا تھا کہ داعش کے خودکش بمباروں میں سے ایک جس نے خود کو افغان وزارت خارجہ کے گیٹ کے قریب دھماکے سے اڑا لیا تھا، اس کا نام خیبر قندھاری تھا، ویڈیو میں نوجوانوں نے اعتراف کیا کہ اس کا نام زکریا التاجکی ہے اور وہ افغانی نہیں تھا ۔

 

15_ اخر میں چند کلمات اسی ویڈیو میں سے ایک نوجوان داعشی کی زبانی داعش کے مشران اور برائے نام امراء کو مخاطب کرتے ہوئے: کیا آپ کو لگتا ہے کہ آپ کے یہاں اور وہاں بکھرے ہوئے تباہ حال ممبر اور آپ کے مجرمانہ دھماکوں سے امارت اسلامیہ کا تختہ الٹ دیا جائے گا اور آپ محض قتل و غارت گری اور دھماکوں سے اقتدار پر آ جائیں گے؟!!

 

و ما علینا الا البلاغ