عراق میں داعش کے چار ارکان کو گرفتار کر لیا گیا۔

#image_title

عراق میں داعش کے چار ارکان کو گرفتار کر لیا گیا۔

 

خبررساں ایجنسی (MNA) کی رپورٹ کے مطابق، عراقی فوج نے کل ملک کے تین صوبوں میں داعش گروپ کے چار ارکان کو گرفتار کرلیا۔

 

عراق کی انسداد دہشت گردی اتھارٹی (سی ٹی ایس) نے کہا؛ داعش کے ان ارکان میں سے ایک کو سلیمانیہ، ایک کو نینویٰ اور دو دیگر کو بغداد سے گرفتار کیا گیا۔

 

حال ہی میں، CTS کے ترجمان صباح النعمان نے کہا؛ کہ اب ہم داعش گروپ کو عراق کی قومی سلامتی کے لیے خطرہ نہیں سمجھتے۔

 

انہوں نے کہا کہ عراق میں دہشت گرد گروہ پہاڑی علاقوں میں موجود ہیں جس کی وجہ سے وہ وہاں آسانی سے چھپے رہ سکتے ہیں۔ انہوں نے زور دیا؛ وہ علاقے شہروں سے بہت دور ہیں۔

 

انھوں نے یہ بھی کہا کہ داعش وقتاً فوقتاً کارروائیاں کرنے کی کوشش کرتی ہے، صرف اس لیے کہ وہ زندہ ہیں، لیکن حقیقت میں وہ کوئی خاص حکمت عملی انجام دینے کے قابل نہیں ہیں۔

 

داعش نے 7 جون 2014 کو عراق پر حملہ کیا اور مختصر مدت کیلئے ملک کے 45 فیصد علاقے پر قبضہ کر لیا۔

 

نومبر 2017 میں داعش کو شکست ہوئی۔

 

رپورٹ کے مطابق، عراقی سیکورٹی فورسز اب پورے ملک میں داعش کی تلاش، کلیئر اور ٹریکنگ جاری رکھے ہوئے ہیں، تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ داعش اور اس کے فراری عناصر (ارکان) دوبارہ سر اٹھا نہ سکیں۔