داعش کے خلاف گواہی

ساتویں قسط

#image_title

داعش کے خلاف گواہی
ساتویں قسط

ابو عبد اللہ مغربی کی گواہی:
ابو عبد اللہ مراکش کے رہنے والے تھے اور داعش میں شمولیت کے لیے شام آئے تھے۔ وہ اپنی کہانی کچھ یوں بیان کرتے ہیں:
پہلے میں نے ٹریننگ کی، پھر مجھے حلب بھیج دیا گیا، جہاں ایک پوسٹ پر میری ڈیوٹی لگ گئی۔ میں نے فدائی کرنے کی خواہش کا اظہار کیا، تو مجھے رقعہ شہر بھیج دیا گیا اور حکم دیا گیا کہ ’پی کے کے‘ (PKK) کے مرتدین کے خلاف کاروائی کرنی ہے۔ مجھے ہدف سمجھا دیا گیا اور میں طے شدہ ہدف کی طرف روانہ ہو گیا۔ جب میں وہاں پہنچ گیا اور مرکز میں داخل ہو گیا تو وہاں میں نے مجاہدین کو نماز پڑھتے ہوئے دیکھا۔ اس سے میں بہت زیادہ حیران ہو گیا کہ یہ کیا ہے؟
ہم نے تو مجاہدین پر حملہ کر دیا ہے…

ماخذ: شیطانی لشکر