خارجی اور انتہا پسندانہ سوچ کے مؤثر عوامل

مولوی مستغفر حنفی

خوارج نے امت کو اس صدی میں جو ناقابل تلافی مادی و معنوی نقصانات پہنچائے ہیں اور پہنچا رہے ہیں، اس کی وجہ کیا ہے؟ یہاں ہم ان عوامل پر بات کریں گے۔

  1. جہالت یا لاعلمی

خوارج کے عروج کی ایک بڑی وجہ جہالت اور لاعلمی ہے، خوارج طویل عرصے سے ایسے مسلمانوں پر مشتمل ہے کہ جو یا تو نو مسلم ہیں، یا پہلے مسلمان تو تھے لیکن کفری حکومتوں کی وجہ سے لمبے عرصے سے دینی علم سے دور تھے، یا پھر اسلامی ملکوں کے نئے نئے نوجوان، مسلمان عورتیں یا اس طرح کے دیگر۔

ان تمام طبقات کے لوگوں کے پاس بالعموم اسلامی اور فقہی علم کی کمی ہوتی ہے، اس لیے کفار اور خفیہ ایجنسیاں کوشش کرتی ہیں کہ ان لوگوں میں انتہا پسندانہ نظریات کو ترویج دی جائے، تاکہ وہ خوارج بن جائیں۔ دیگر مسلمانوں میں خوارج کو داخل کرنے کی زیادہ کوشش اس لیے نہیں کی جاتی کیونکہ وہ اسلام کو تقریباً بہتر سمجھتے ہیں، لہٰذا جو شخص اسلام کے مبارک دین کے تقاضوں کو کسی حد تک سمجھ لے گا، تو وہ کبھی بھی خوارج میں شامل نہیں ہو سکتا۔ اس بات کی عملی مثالیں بھی ہم نے دیکھی ہیں۔ دنیا میں بہت سے خوارج یا تو تاجکستان، ازبکستان اور اس طرف کے ممالک کے ہیں، یا چین کے ایغور اور ترکستانی مسلمانوں کے گروہوں سے ان کا تعلق ہے، اور ان ممالک کے مسلمانوں کو ان پر مسلط کمیونسٹ حکومتوں نے دینی علم سے بہت دور رکھا ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ خوارج کے اقوال اور تحریفات کی وجہ سے جلد گمراہ ہو جاتے ہیں۔

اسلامی ممالک میں خوارج کا نشانہ بننے والے یا تو کم عمر ہیں، یا عورتیں، یا پھر صحراؤں، دشتوں سے تعلق رکھنے والے وہ نوجوان ہیں کہ جن میں دینی جذبہ تو ہے لیکن دین کے بارے میں بالکل لاعلم ہیں۔

پس ان تمام طبقات میں خوارج زیادہ پائے جاتے ہیں اور اس لیے ان میں بہت سے خوارج بن جاتے ہیں کیونکہ وہ اسلامی علوم کے حوالے سے جاہل ہوتے ہیں۔

  1. مال

چونکہ خوارج امریکہ اور اسرائیل کی مشترکہ خفیہ ایجنسی ہے، اس لیے ان کے اخراجات بھی زیادہ ہوتے ہیں، اور اس لیے ان کو رقوم بھی زیادہ ملتی ہیں، یہاں تک کہ انہیں بعض کاروائیاں کرنے پر ہزاروں ڈالر انعام بھی دیا جاتا ہے۔ چونکہ بعض نوجوان مال کے شوقین ہوتے ہیں، اور انہیں گناہ اصلاً گناہ نظر نہیں آتا، تو وہ خوارج کے ساتھ پیسہ کمانے کے لیے شامل ہو جاتے ہیں۔ اس کی بہترین مثال شہاب المہاجر ہے۔ شہاب المہاجر جمہوری حکومت کے دور میں امر اللہ صالح کا باڈی گارڈ تھا، جب امارت اسلامیہ کی حکومت آئی تو وہ خوارج کی صف میں شامل ہو گیا، اور وہاں ایک اہم شخصیت بن گیا۔

ٹھیک ہے، بالفرض اور قسمت سے، شہاب المہاجر کو دین کا غم تھا تو پھر وہ امر اللہ صالح کا باڈی گارڈ کیوں بنا؟ تو لازمی بات ہے کہ وہ پیسے کا بندہ ہے، اور یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ خوارج پیسہ دیتے ہیں اسی لیے تو شہاب المہاجر بھی وہاں چلا گیا، ورنہ اگر یہ پیسوں کا معاملہ نہ ہوتا تو شہاب المہاجر کا وہاں کیا کام؟

  1. نفس پرستی

خوارج نے اپنی صفوں میں دینی دلائل تراش کر اپنے لیے ایسے کام اور اعمال حلال کر لیے ہیں کہ جو اور کہیں بھی حلال نہیں سمجھے جاتے، اس لیے وہ نوجوان جو اپنی نفسانی شہوات و خواہشات کو آزادی کے ساتھ پورا کرنا چاہتے ہیں، وہ خوارج کے ساتھ مل جاتے ہیں۔

مثلاً دیگر کسی اسلامی گروہ میں کوئی شخص ایسا نہیں کر سکتا کہ جہادی محازوں پر اپنے ساتھ عورتوں کو بھی رکھے، لیکن خوارج نے اس کام کے لیے دلائل گھڑ لیے ہیں، اور عام علاقوں سے جو عورت ان کو پسند آتی ہے، زبردستی اپنے ساتھ لے آتے ہیں اور وہاں ان سے نکاح کر لیتے ہیں۔

ایک اور بات یہ کہ کسی اسلامی گروہ میں ایسا نہیں ہوتا کہ طلاق کی نیت سے عورت سے نکاح کیا جائے، یعنی ایک عورت سے نکاح کرے اور دوسری کو طلاق دے دے، لیکن خوارج میں یہ عام عادت ہے، اس لیے خوارج میں کوئی شخص ایسا کر سکتا ہے کہ وہ بیس سے بھی زیادہ عورتوں سے نکاح کرے اور طلاق دے۔

خیر اگر پیسہ زیادہ ہو، اور عورتوں اور شہوات پر تمام پابندیاں ختم ہوں، تو ایسے گروہ میں لازماً نفسانی خواہشات کی پیروی کرنے والے لوگ زیادہ آئیں گے، کیونکہ دیگر کسی بھی جگہ پر اپنی نفسانی خواہشات کو پورا کرنے کے اس قدر مواقع میسر نہیں آ سکتے جیسے اس گروہ میں آ تے ہیں۔

  1. پراپیگنڈہ جنگ

خوارج چونکہ ایک امریکی خفیہ ایجنسی ہے، اس لیے میڈٰیا کے فریم ورک میں بھی اسے پراپیگنڈہ کرنے کے لیے ہر قسم کے مواقع فراہم کیے گئے ہیں۔

دیگر مجاہدین جو کسی ایک آن لائن گروپ وغیرہ میں کوئی سرگرمی کرتے ہیں، تو فوراً کفار اس گروپ، چینل یا ویب سائٹ کو بلاک کر دیتے ہیں، لیکن خوارج کے کچھ چینلز برسوں سے ان کے لیے کام کر رہے ہیں، لیکن وہ کبھی بند نہیں ہوتے، کیونکہ اپنی نشریات کے طور وہ ایسی دلکش اور جذباتی ویڈیوز بناتے ہیں کہ جس سے مسلمان کم عمر لڑکے ان کے پراپیگنڈہ سے متاثر ہو جاتے ہیں اور آہستہ آہستہ خوارج کی طرف راغب ہونے لگتے ہیں۔

خلاصہ یہ کہ خوارج ایسے عوامل سے پیدا ہوتے ہیں کہ جن کا اسلامی جہاد اور اسلام سے کوئی تعلق نہیں، ان عوامل میں سے کچھ کا ہم نے اس مضمون میں ذکر کیا، زندگی رہی تو دیگر عوامل کا اگلے مضمون میں ذکر کریں گے۔

ان شاء اللہ تعالیٰ

و ما علينا إلا البلاغ