تکفیری گروہ خوارج کا نیا سربراہ کون ہے؟

#image_title

تکفیری گروہ خوارج کا نیا سربراہ کون ہے؟

ابو حفص (جس کا ذاتی نام بنیامین افرایم ہے) ایک اسرائیلی امام اور مبلغ ہے، سن ۲۰۱۱ عيسوی میں لیبیائی رژیم کی سرنگونی کے بعد وہاں پہنچ گئے.
وہاں ایک مسجد کے امام بنے، کچھ عرصہ بعد ایک ویلفئر ٹرسٹ کی بنیاد رکھی، جسکي فنڈنگ قطر کیجانب سے ہورہی تھی، اسی طریق سےلاچاروں کو امدادی اشیاء پہنچانا آغاز کیا یہاں تک کہ اسکے محبین بڑھنے لگے.
رفتہ رفتہ اس نے لیبیا میں ( ابو حفص کے نام تلے) ایک ملیشا بنانے کا فیصلہ کر لیا اور بہت سارے لیبیوں کو بے عدالتی کے خلاف انقلاب کے بہانے جہاد کے نام سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ابھارا اور اپنے ارد گرد جمع کرلیا پھر یہ گروہ دو فریق پر تقسیم ہوگئ: ①سپیشل آپریشن برانچ ②ہلاکتوں کی برانچ، یہاں تک کہ وہاں سب سے قوی ملیشا بن گئ.
کچھ عرصہ بعد داعش کی حمایت کا اعلان کردیا.
مدت دراز گزرنے کے بعد مصری انٹیلیجنس کا ایک آفیسر ابو حفص کے تصویر کھینچنے، لیب ٹاپ اور کمپیوٹر ہیک کرنے پر کامیاب ہوگئے.
اسکے بعد یہ معلوم ہوا کہ وہ لیبیا کی نہیں بلکہ اسرائیلی انٹیلجینس ادارہ #موساد کا ایک #آفیسر_بنیامین_افراییم ہے.
سن ۲۰۱۷ عیسوی سال بنغازی علاقے میں لیبیا کی فوج اور سیکیورٹی فورسز کی مدد سے کامیاب آپریشن کے نتیجے میں ایک گروہ کے ہمراہ مصر کی انٹیلیجنس ادارے نے گرفتار کرلیا.